Monday , 26 February 2018
بریکنگ نیوز
Home » بزنس » 1000 اور 500 کے کرنسی نوٹ آر بی آئی کی مہلت میں 30 جون تک توسیع
1000 اور 500 کے کرنسی نوٹ آر بی آئی کی مہلت میں 30 جون تک توسیع

1000 اور 500 کے کرنسی نوٹ آر بی آئی کی مہلت میں 30 جون تک توسیع

کالا دھن اور جعلی کرنسی کو روکنے کے اقدمات کے طور پر ریزرو بینک آف انڈیا نے گذشتہ سال اعلان کیاتھا کہ 2005 سے پہلے جاری کئے گئے 1000 اور 500 روپئے کے نوٹوں کا چلن بند کردیا جائیگا ۔ عوام کو مہلت دی گئی تھی کہ وہ مقررہ وقت میں ایسے نوٹ بینکوں سے تبدیل کرلیں۔ 4 جنوری 2015 کو یہ مہلت ختم ہورہی تھی لیکن آر بی آئی نے اس میں مزید 6 ماہ کی توسیع کردی ہے اور نوٹوں کے تبادلے کیلئے 30 جون 2015 تک کی مہلت دے دی ہے ۔ عوام اور تاجروں میں یہ الجھن ہے کہ 2005 سے پہلے کے نوٹوں کی پہچان کیسے کی جائے؟ اس کیلئے آر بی آئی نے رہنمائی کرتے ہوئے بتایا ہے کہ نوٹ کے پیچھے 2005 سے طباعت کا سال شائع کرنا شروع کیا گیا یعنی جس نوٹ کے پیچھے طباعت کا سال نہیں چھپا ہوگا وہ نوٹ 2005 سے پہلے کی تصور کی جائے گی اور اس کو اب 30 جون کے بعد بینک یا بازار میں قبول نہیں کیا جائیگا۔ اگر کسی تاجر یا فرد کے پاس پرانے نوٹ رکھے ہیں تو وہ ان کو اُلٹ کردیکھیں اگر ان پر طباعت کا سال چھپا ہوا نہیں ہے تو فوراً اس نوٹ یا نوٹوں کو بینک میں لے جاکر بدل دیں ۔ اگر لین دین کے دوران میں کوئی ایسی نوٹ آپ کو تھما رہا ہے جس پر اشاعت کا سال نہیں ہے تو اس کو لینے سے انکار کردیں۔ آر بی آئی نے بتایا کہ جب سے یہ مہم شروع ہوئی ہے تب سے ایسے 144.66 کروڑ نوٹ جن کی مالیت 52,855 کروڑ روپئے ہوتی ہے تبدیل کئے گئے ہیں۔ اس وقت کسی بھی بینک کے کاؤنٹر سے یا اے ٹی ایم سے 2005 سے پہلے کے نوٹوں کی اجرائی یا ادائیگی عمل میں نہیںآرہی ہے ۔ اس لئے نوٹ لیتے اور دیتے وقت چوکنا رہنے کی ضرورت ہے۔

Comments

comments