Tuesday , 16 October 2018
بریکنگ نیوز
Home » بزم اطفال » باہمت کبوتر
باہمت کبوتر

باہمت کبوتر

اسی پیڑ کے نیچے ایک چوہا بھی رہتا تھا۔ وہ، کبوتروں کااچھا دوست تھا۔ صبح و شام چوہا، کبوتروں کی خیر و عافیت پوچھتا رہتا۔ کبوتر بھی چوہے کا بہت خیال رکھتے تھے۔ چوہے نے کبوتروں کو ایک دن بتایا کہ جنگل میں ایک شکاری آیا ہوا ہے ۔ وہ دھوکہ سے کبوتروں ،خرگوشوں اور دیگر جانوروں کو پکڑنا چاہتا ہے ۔ اس نے جال بھی بچھا رکھا ہے۔ کبوتروں نے شکاری کے بارے میں بتانے پر چوہے کا شکریہ ادا کیا۔ دوسرے دن تمام کبوتر دانہ چگنے ایک ساتھ چلے گئے اس دن انہیں کھانا نہیں ملا بھوکے واپس آگئے ۔ تیسرے دن کبوتر غذا کی تلاش میں نکل پڑے تھے کہ دور میدان میں انہیں بکھرا اناج دکھائی دیا تمام کبوتر نیچے اترے، کبوترشکاری کے بچھائے جال کو نظر انداز کرتے ہوئے دانہ چگنے لگے۔ اچانک شکاری نے جال کی ڈور کھینچ لی جس کے نتیجہ میں تمام کبوتر جال میں پھنس گئے ۔ وہ انہیں لینے کیلئے آرہا تھا کہ تمام کبوتروں نے فیصلہ کیا کہ ہمیں مصیبت کی گھڑی میں ہمت سے کام لینا ہوگا۔ سب نے فیصلہ کیا کہ ہم تمام کو پوری قوت کے ساتھ جال سمیت اڑنا ہوگا ۔ شکاری قریب تھا کہ تمام کبوتروں نے ایک جٹ ہوکر اُڑنا شروع کیا ، وہ جال کے ساتھ اڑ رہے تھے، ان کبوتروں کو چوہا یاد آگیا۔ وہ چوہے کے پاس پہنچے تمام داستان سنائی اور انہیں رہا کرانے کی التجا کی چوہے نے کہا کہ آپ میرے اچھے دوست ہیں میں ضرور آپ کو رہا کراؤں گا۔ چوہا تیزی کے ساتھ جال کو کترنے لگاتھوڑی دیر میں چوہے نے جال کتر دی اور تمام کبوتر آزاد ہوگئے۔ شکاری حیران رہ گیا کہ کس طرح کبوتر جال کے ساتھ اُڑ گئے ۔ کبوتروں نے چوہے کا شکریہ ادا کیااور آئندہ مکر و فریب والے شکاری سے چوکس رہنے لگے۔

Comments

comments