Monday , 26 February 2018
بریکنگ نیوز
Home » بزم اطفال » سی ارچن خار پشت جاندار
سی ارچن خار پشت جاندار

سی ارچن خار پشت جاندار

سی ارچن (Sea Urchin)کو بحری خار پشت کہا جاتا ہے یہ سمندری جاندار ہے اس کا اوپری حصہ خار( کانٹوں) سے ڈھکا رہتا ہے۔ یہ غیر فقری جاندار ہے اس کا تعلق یکائنو ڈرمیٹا خاندان سے ہے۔ اس کے پشت پر خار رہنے سے اسے Sea hedgehogs کہتے ہیں۔ یہ ایک چھوٹا جاندار ہے جو گیند کی طرح دکھائی دیتا ہے۔ اس کے اب تک 950 کے قریب انواع دریافت ہوچکے ہیں جو تمام سمندر میں 5000 میٹر کی گہرائی میں پائے جاتے ہیں۔ ان کے یہ خار‘ انہیں حملہ آوروں سے بچائے رکھتے ہیں ان کی جسامت 3 تا 10 سنٹی میٹر کے قریب ہوتی ہے۔ سی ارچن عام طور پر سیاہ اور ہلکے سبز، زیتونی‘ براون، پرپل نیلے اور سرخ رنگوں میں پائے جاتے ہیں ان کی رفتار انتہائی سست ہوتی ہے۔ بحری خار پشت کی غذا عموماً الجی، اور دیگر آبی حشرات ہوتی ہے ۔ اگر سی ارچن کو اُلٹا کردیا جائے تو یہ کٹورے کی طرح دکھائی دیتا ہے اس کااوپری حصہ کانٹوں سے بھرا ہوا ہوتا ہے اس کے کانٹے نوکدار اور 1 تا 3 سنٹی میٹر لمبے ہوتے ہیں۔ خول نما میں مختلف اعضاء پائے جاتے ہیں۔ اوپری حصہ میں منہ پایا جاتا ہے جس میں پانچ دانت ہوتے ہیں۔ اس جاندار میں گلس Gills کے پانچ جوڑ پائے جاتے ہیں جن کی مدد سے یہ سانس لیتا ہے۔ اس میں آنکھ یا آئی اسپاٹ نہیں پائے جاتے مگر اس کی باڈی کمپاونڈ آئی کی طرح کام کرتی ہے۔ یہ چھونے سے روشنی اور کیمیکل سے حساس ہوجاتے ہیں اس کے لمبے خار اسے حرکت کرنے میں مدد کرتے ہیں۔ بالغ سی ارچن، اپنے کانٹوں سے حملہ آوروں سے اپنے آپ کو بچائے رکھتے ہیں ان میں چند سی ارچن زہریلے بھی ہوتے ہیں۔ یہ انوکھے جاندار، سرطان، اولف عیل اور سی ووٹر کی مرغوب غذا ہیں۔

Comments

comments