Thursday , 15 November 2018
بریکنگ نیوز
Home » انڈیا » اکھلیش-راہل کی دوستی کا فارمولہ ، جانیں کسے ملیں گی کتنی نشستیں؟
اکھلیش-راہل کی دوستی کا فارمولہ ، جانیں کسے ملیں گی کتنی نشستیں؟

اکھلیش-راہل کی دوستی کا فارمولہ ، جانیں کسے ملیں گی کتنی نشستیں؟

اتر پردیش اسمبلی انتخابات میں کانگریس سماج وادی پارٹی کے ساتھ اتحاد کرنے کو تیار ہے. اگرچہ اب سیٹوں کے بٹوارے کو لے کر کام چل رہا ہے اور اگلے 24 گھنٹے میں اکھلیش یادو کانگریس آر ایل ڈی کے ساتھ ایس پی کے اتحاد کا اعلان کر سکتے ہیں لیکن اس سے پہلے ہی میڈیا نے اکھلیش-راہل کی دوستی کا فارمولہ وضاحت کر لیا ہے. ایک مکمل تحقیق کے بعد میڈیا نے آج وہ فارمولہ آپ کے لئے پیش کیا ہے، جس کی بنیاد پر سماج وادی پارٹی اور کانگریس کے درمیان نشستیں بٹ سکتی ہیں.

اکھلیش کی سماج وادی پارٹی سے اتحاد کو تیار کانگریس

والد ملائم سے جھگڑے کے بعد اکھلیش یادو کو سائیکل انتخابی نشان ملتے ہی میڈیا نے سب سے پہلے بتایا تھا کہ اب کانگریس سے یوپی میں اتحاد کسی بھی لمحے طے ہے. آج سے پہلے اس بات کی مہر یوپی میں کانگریس کے انچارج غلام نبی آزاد نے لگائی. آزاد نے مانا کہ اکھلیش کی سماج وادی پارٹی کے ساتھ کانگریس کا اتحاد ہو رہا ہے اور آج کل میں دونوں پارٹیوں میں سیٹوں کے معاہدے کا اعلان کریں گے.

کانگریس سے اتحاد پر بات چل رہی ہے: اکھلیش یادو

اس کے بعد اکھلیش یادو نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ کانگریس سے اتحاد پر بات چل رہی ہے. رام گوپال جی اس پر بات کر رہے ہیں. اتحاد کے فیصلہ کا اعلان لکھنؤ سے ہوگا. میڈیا کی خبر پر تیسری مہر لگائی یوپی میں کانگریس کی طرف سے وزیر اعلی کے عہدے کی امیدوار شیلا دکشت نے. یوپی میں کانگریس کی سی ایم دعویدار شیلا دکشت نے کہا کہ میں نہیں سمجھتی کی دو سی ایم کے چہرے ہو سکتے ہیں اس لئے میں نے پہلے ہی کہہ دیا تھا کہ اگر اتحاد کیا جائے گا تو میں خود کو ہٹا لوں گی.

اتحاد میں کسے ملیں گی کتنی نشستیں؟

میڈیا آپ کو وہ فارمولہ بتانے جا رہا ہے جس کے تحت راہل گاندھی اور اجیت سنگھ کی پارٹی کے ساتھ مل کر اکھلیش یادو اترپردیش میں انتخابات لڑنے کی تیاری کر رہے ہیں. ایسی صورت میں سماج وادی پارٹی کے ساتھ اتحاد میں کوئی کانگریس کو سوا سو نشست کا اندازہ لے رہا ہے، کوئی 100 سیٹ کا تو کوئی 80 سیٹ کا. تو ہم آپ کو بتا رہے ہیں کہ اتحاد میں کسے ملیں گی کتنی نشستیں؟

اتر پردیش میں اسمبلی کی 403 نشستیں ہیں جسمے 76 نشستیں ایسی ہیں جہاں کانگریس اور آرایل ڈي 2012 کے انتخابات میں سماج وادی پارٹی سے آگے تھے – ان 76 سیٹوں میں سے 56 سیٹیں ایسی تھیں جہاں کانگریس 2012 میں سماجوادی پارٹی سے آگے تھی 56 سیٹوں میں 28 سیٹوں پر کانگریس جیتی تھی، 26 سیٹوں پر کانگریس سماج وادی پارٹی سے آگے تھی، 2 سیٹیں ایسی تھیں جہاں سماج وادی پارٹی نے الیکشن نہیں لڑا تھا .20 سیٹیں ایسی تھیں جہاں اجیت سنگھ کی پارٹی آر ایل ڈی سماج وادی پارٹی سے آگے رہي اسكے علاوہ 8 سیٹیں ایسی تھیں جہاں سماج وادی پارٹی چوتھے نمبر رہي كانگریس کو اب 85-90 سیٹ اکھلیش دے سکتے ہیں اور اجیت سنگھ کو 20 سے 22 سیٹ مل سکتی ہیں جے ڈي يو بھی مهاگٹھبدھن میں ساتھ رہ کر 2-3 سیٹ پا سکتی ہے. یعنی کل 110 سے 115 نشستیں اکھلیش یادو مهاگٹھبدھن کو دے سکتے ہیں.

Comments

comments