Tuesday , 22 May 2018
بریکنگ نیوز
Home » دیگر » لائف اسٹائیل » لانگ وسٹس پوشاک کا جدید رحجان
لانگ وسٹس پوشاک کا جدید رحجان

لانگ وسٹس پوشاک کا جدید رحجان

دُنیا میں فیشن کے رحجانات تبدیل ہوتے رہتے ہیں اور فیشن کے رحجان کو اپنانے کا اختیار صرف ہالی ووڈ یا بالی ووڈ کے فنکاروں یا فیشن انڈسٹریز سے وابستہ ماڈلس کو ہی نہیں ہے بلکہ عام آدمی یعنی مرد و خواتین یکساں طور پر جد ید فیشن کے تقاضوں سے خود کو ہم آہنگ کرسکتے ہیں۔عام آدمی تک فیشن کے عصری رحجانات سے واقف کرانے کا کام میڈیا کے ذریعہ انجام دیا جاتا ہے۔میڈیا کی بدولت ہی عام آدمی بھی فیشن کے مطابق پوشاک زیب تن کرتا ہے فیشن کو عام کرنے میں خواتین کا اہم رول رہتا ہے۔ فی زمانہ خواتین پر لانگ وسٹس(Long Vests)کے فیشن کا جادو سوار ہے ۔ ماہر ڈیزائنر‘موسم کو مد نظر رکھتے ہوئے لانگ وسٹس پوشاکیں تیار کرتے ہیں ان میں طالبات‘مسلم خواتین اور بچیوں کیلئے مختلف کلرس میں دستیاب ہیں۔یہ ایک منفرد فیشن ہے جو اب ہر لڑکی لانگ وسٹس پہننے کو ترجیح دے رہی ہے۔ یہ کہا جائے تو بیجا نہ ہوگا کہ لانگ وسٹس کا فیشن حالیہ عرصہ میں انتہائی مقبول رہا ہے۔ کرسمس تہوار کے وقت نوجوان لڑکیاں‘ اس فیشن کے رنگ میں رنگی نظر آئیں۔یہ لباس‘موسم خزاں کے اوائل کی مناسبت سے بازار میں متعارف کرایا گیا۔ لانگ وسٹس‘اس سیزن کا ایک دم پر فیکٹ لباس ہے جسے خواتین اور طالبات‘زیب تن کرتے ہوئے پارٹیوں میں شوق سے شرکت کرسکتی ہیں۔در اصل یہ پوشاک ‘ 70کی دہائی کا مقبول عام ڈریس ‘جیکٹس اور بلازر کا متبادل ہے۔ لانگ وسٹس کو جب کھلا چھوڑدیا جائے(بٹن نہ لگائیں)تو لڑکی کی خوبصورتی اُجاگر ہوگی۔لانگ وسٹس کے اندر سوئٹر پہن کر آپ اکتوبر اور نومبر کی شدید سردی سے بھی اپنے جسم کو بچائے رکھ سکتی ہیں۔ سیاہ یا دیگر ہلکے رنگ کے فل آستین کے سوئیٹرس یا شرٹس پر لانگ وسٹس کا لک شاندار رہے گا اس پر جینس یا لیگنس کا تڑکہ لا جواب رہیگا۔ہیل والی سینڈل بھی اس ڈریس پر خوب جچے گی۔مسلم خواتین میں اس پوشاک کا چلن عام ہے۔پاکٹ والا لانگ وسٹس پر کئی مسلم طالبات اسکارف پہنتی ہیں۔ یہ ایک نیا اور منفرد ڈیزائن والا پہناوا ہے۔

Comments

comments