Wednesday , 17 October 2018
بریکنگ نیوز
Home » دیگر » ٹیکنالوجی » اسپیس ایکس میں کرسکتے ہیں چاند کی سیر
اسپیس ایکس میں کرسکتے ہیں چاند کی سیر

اسپیس ایکس میں کرسکتے ہیں چاند کی سیر

امریکہ میں ایک خانگی راکٹ کمپنی اسپیس ایکس نے عام آدمیوں کو بھی چاند کی سیر کرانے کا اعلان کیا ہے۔رقم ادا کرنے پر ا س کمپنی کا راکٹ دو افراد کو لے کر جائیگا اور چاند کے چکر لگا کر واپس آجائیگا۔یہ مشن2018سے کارکرد ہوجائیگا۔کمپنی کے مالک ایلون موسک نے یہ اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ ایک ہفتہ طویل یہ سفر بالکل اس طرح نئی تاریخ رقم کرے گا جس طرح ناسا کے اپولو8مشن نے کیا تھا۔ ناسا کے خلا بازوں نے آخری مرتبہ45برس قبل چاند پر قدم رکھا تھا۔اس مشن پر جن افراد کو تجرباتی طور پر بھیجا جارہا ہے ان کے نام ظاہر نہیں کئے گئے ہیں یہ تجرباتی پرواز اس سال کے آخر میں ہوگی کمپنی کا کہنا ہے کہ امریکی خلائی تحقیقی ادارے ناسا کے تعاون سے ہی اس کا یہ مشن ممکن ہوسکا ہے۔ ایلن نے بتایا کہ جن افراد کو چاند کی سیر کیلئے بھیجا جائیگا وہ عام آدمی ہوں گے۔کوئی مشہور ہستی یا ہالی ووڈ اداکار نہیں ہوں گے۔ افراد کی جسمانی تربیت اور جانچ کا آغاز اس سال کے اواخر میں ہوگا۔ پہلے مشن کو ابھی کوئی نام نہیں دیا گیا ہے جو ممکن ہے کہ2018 کے دوسرے ماہ کے دوران ممکن ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ خلائی گاڑی کے ذریعہ زمین سے چاند تک اور واپس زمین تک کا سفر پُر خطر ضرور ہے تا ہم اس میں خطرات کو کم سے کم کرنے کی کوشش کی جائیگی۔انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ عام سیاح اس گاڑی کے ذریعہ صرف چاند کے گرد چکر کاٹیں گے اس پر اُتریں گے نہیں۔امریکہ نے آخری مرتبہ 1970 میں چاند پر اپنے خلا باز بھیجے تھے اس کے بعد سے کوئی چاند پر نہیں گیا ۔حال ہی میں ہندوستان نے چند ریان مشن بھیجا تھا اور اب چین نے اپنے خلا بازوں کو چاند پر اُتارنے کی تیاری کررہا ہے۔اسپیس ایکس کا کہنا ہے کہ اس کے دو سیاحوں نے چاند کی سیر کرنے کیلئے اس کو بھاری رقم ادا کردی ہے کمپنی نے بتایا کہ جب سب کچھ طے ہوجائیگا۔سیاح خلا میں جانے کیلئے فٹ قرار دیئے جائیں گے ضروری قانونی منظوریاں حاصل کر لی جائیں گی تب اس مشن کی مکمل تفصیلات کا اعلان کیا جائیگا اور شائد اسی وقت ان دو سیاحوں کے ناموں کا اعلان ہوگا اس موسم گرما میں اسپیس ایکس کی جانب سے فالکن نامی بھاری راکٹ کا تجربہ کیا جارہا ہے ۔ یہ راکٹ اتنا طاقتور ہوگا کہ چاند کے مدار میں جا کر واپس آجائیگا ۔یہ راکٹ اب تک چاند کیلئے بھیجے گئے راکٹوں سے دو تہائی زیادہ وزنی اور تیز رفتار ہوگا۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ گزشتہ ستمبر میں جب ایکس نے اعلان کیا تھا کہ وہ مریخ پر کالونی بسائیں گے اور2024سے100انسانوں کو مریخ پر پہنچائیں گے تو ان کا مضحکہ اُڑایا گیا تھا۔ کمپنی اپنے اس چاند کے مشن کے ذریعہ مریخ کے منصوبوں کو حقیقی بنانے کی کوشش کرے گی۔

Comments

comments