Friday , 24 November 2017
بریکنگ نیوز
Home » سیاحت » حیدرآباد کے واٹر پارکس موسم گرما کیلئے بہترین تفریح
حیدرآباد کے واٹر پارکس موسم گرما کیلئے بہترین تفریح

حیدرآباد کے واٹر پارکس موسم گرما کیلئے بہترین تفریح

موسم گرما کی تعطیلات کا آغاز ہوچکا ہے۔یقینی طور پر آپ تعطیلات کے موقع پر تفریح کی منصوبہ بندی کررہے ہوں گے۔ حیدرآباد شہر جو تاریخی اہمیت کی حامل عمارتوں کیلئے شہرت رکھتا ہے وہیں جدید دور میں دستیاب تفریحات کے مراکز بھی یہاں قائم ہورہے ہیں۔موسم گرما میں آبی تفریحات کو خصوصی اہمیت دی جاتی ہے۔ حیدرآباد کے گرد و نواح کے علاوہ قلب شہر میں آبی تفریح کے کئی مراکز قائم ہورہے ہیں ان میں چند ایک تفریح مراکز یعنی واٹر پارکس کا ہم یہاں ذکر کریں گے جو نہ صرف مقامی بلکہ دوسرے مقامات سے آنیوالے سیاحوں میں بھی بے حد مقبول ہیں۔ یہ واٹر پارکس پورے خاندان کیلئے دن بھر کی تفریح فراہم کرتے ہیں۔
جل وہار(حسین ساگر): قلب شہر نکلس روڈ پر عوامی تفریح کے کئی مقامات کے درمیان یہ واٹر پارک بنایا گیا ہے۔ یہ پارک آئی میاکس ملٹی پلکس اور سنجیویا پارک کے قریب ہے۔یہ پورے خاندان کی تفریح کیلئے بنایا گیا ہے۔بچوں اور بالغوں دونوں کیلئے کئی ایک تفریح کا سامان یہاں مہیا کرایا گیا ہے ۔ دوستوں یا افراد خاندان کے ساتھ آپ یہاں کئی طرح کے جھولوں‘آبی کھیل کود‘ایڈونچر پر مبنی کھیل میں حصہ لے سکتے ہیں۔ جل وہار واٹر پارک میں کئی طرح کے جھولے ہیں۔یہاں فیملی سلائیڈ‘منی اکواٹریلرس‘ ٹلٹ بکیٹ مشروم امبریلا‘فلوٹ سلائیڈ اور پنڈولم جیسی تفریحات موجود ہیں جو آپ کو دن بھر مصروف رکھ سکتی ہیں۔ آپ تالاب یعنی واٹر پول میں بھی اپنا وقت گذار سکتے ہیں ۔ آپ رین ڈانس میں حصہ لے سکتے ہیں رین ڈانس یہاں کی مقبول ترین تفریح ہے یہاں لوگوں کی کافی بھیڑ ہوتی ہے ۔بچوں کیلئے بھی کئی طرح کی آبی تفریحات موجود ہیں۔ یہاں کئی جھولے اور آبی کھیل بچوں کیلئے ہی مختص کئے گئے ہیں۔ ان میں منی کورسلے‘منی ٹرین‘سوپر جیٹ‘بیاٹری کاریں‘ منی رینبو وہیل‘ منی جوکر‘بیاٹری بائیکس ایر ہاکی‘واٹر شوٹر ‘ باسکٹ بال‘بنجی ٹرمپولن اور دوسرے شامل ہیں ۔ اگر آپ ویڈیو گیمس کے دلدادہ ہیں تو آپ اپنا پسندیدہ ویڈیو گیمس کھیل سکتے ہیں۔داخلہ ٹکٹ 3 فیٹ سے کم قد والوں کیلئے(بچوں) 150 روپے اور3فیٹ سے زیادہ قد والوں کیلئے 200 روپے ہے ۔ کاسٹیوم یعنی آپ کو پانی میں اُترنے کیلئے دیئے جانیوالے لباس کا کرایہ 30 روپے ہے ۔ سکیوریٹی ڈپازٹ کے طور پر100روپے رکھنا پڑے گا۔ پارک کے اوقات تمام ایام کار میں یعنی پیر سے اتوار تک11بجے دن سے شام7بجے تک ہیں اگر اسکول کے ذریعہ یہاں تفریح کرنا ہے تو30سے زیادہ طلباء کا ہونا ضروری ہے۔ کارپوریٹ پیا کیج20سے زیادہ افراد ہونے پر دیا جاتا ہے۔ تفصیلات فون نمبر 65581143 040- سے حاصل کرسکتے ہیں۔
اوشین پارک(گنڈی پیٹ): شہر کا سب سے پہلا آبی پارک ہے۔ یہ گنڈی پیٹ(عثمان ساگر) میں حیدرآباد سے تقریباً20کیلو میٹر دور قائم کیا گیا ہے۔یہ پارک وسیع و عریض مقام پر پھیلا ہوا ہے اس کے دو حصے ہیں ایک پانی سے متعلق تفریح کیلئے دوسرا امیوزمنٹ پارک ہے۔ہر عمر کے لوگوں کیلئے یہاں تفریح کا سامان موجود ہے چاہے وہ بڑے ‘ بچے یا بوڑھے ہوں۔یہاں واٹر رائیڈرس ‘ بچوں کا سوئمنگ پول‘دیو پول واٹر سلائیڈس(آبی پھسل بنڈے) اور دیگر تفریحات موجود ہیں۔ سلام بم‘ جمپنگ کارس بھی یہاں کی مخصوص تفریحات ہیں۔ آبی تفریحات کے علاوہ یہاں بغیر پانی کی یعنی خشکی کی تفریحات موجود ہیں ان میں سوپر لوپ‘60فٹ کا جھولا‘بریک ڈانس جھولا‘ سوپر جیٹ اور ہائی سوئنگر شامل ہیں۔ جو آپ کو بھر پور تفریح فراہم کرتے ہیں آپ اپنی ہمت اور بہادری کی یہاں جانچ کرسکتے ہیں۔ واٹر پارک میں پنڈولم‘اکوااسینک‘کریزی کروز‘زپ زیاپ زوم‘ ملٹی لائن رائیڈ‘ویو پول‘ہرا کری‘ٹورناڈو‘اکوا گائیڈ‘ اکوا ٹرائیل اور اسپلاش‘ لوگوں کے پسندیدہ کھیل ہیں۔اوشین پارک میں بچوں کیلئے ایک مخصوص گوشہ بھی بنایا گیا ہے یہاں بچوں کی سواری کیلئے ٹوائے ٹرین‘ہیلی کاپٹرس‘غبارے اور ان کے پسندیدہ ویڈیو گیمس موجود ہیں۔ ویو پول اور سوئمنگ پول مردوں‘ خواتین‘ بچوں کیلئے الگ الگ بنائے گئے ہیں۔ اوشین پارک کے داخلہ ٹکٹ میں کئی جھولے شامل ہیں لیکن بعض مخصوص تفریحات کیلئے الگ سے ٹکٹ لینا پڑے گا سوپر لوپس‘جمپنگ کارس‘روپ وے‘بمپر بوٹس کیلئے ٹکٹ الگ ہے۔ داخلہ شرح بڑوں کیلئے300روپے اور بچوں کیلئے230 روپے ہے۔کالج طلباء کیلئے250روپے اور اسکولی طلباء کیلئے فی کس220روپے ہے۔ اس پارک کے اوقات11بجے دن تا7:30بجے شام ہے۔ مزید تفصیلات فون نمبر040-66049545سے حاصل کرسکتے ہیں۔
ماونٹ اوپیرا(وجئے واڑہ ہائی وے):یہ پارک شہر حیدرآباد سے38کیلو میٹر دور بنایا گیا ہے۔ اپنے قیام کے چند مہینوں میں ہی اس تھیم پارک نے سیاحوں میں زبردست مقبولیت حاصل کر لی ہے۔ اس پارک میں بھی ہر عمر کے لوگوں کیلئے تفریح کا دلچسپ سامان مہیا کرایا گیا ہے۔ یہاں یہ نوٹ کرنا ضروری ہے کہ ماونٹ اوپیرا پارک دُنیا کے سب سے بڑے فلم اسٹوڈیو رامو جی فلم سٹی سے صرف4کیلو میٹر دور ہے۔55ایکڑ پر محیط اس پارک میں چھوٹی موٹی پارٹیاں‘برتھ ڈے‘میریج ڈنر منانے کی بھی سہولت ہے۔ محکمہ سیاحت نے اس پارک کو اپنی فہرست میں شامل کر دیا ہے۔ اس پارک میں اسکول پکنک اور کالج پکنک کیلئے بھی پیاکجس دیئے جاتے ہیں جس میں تفریح کے ساتھ ساتھ طعام کی سہولت بھی شامل رہتی ہے۔ یہ پارک پہاڑی پر بنایاگیا ہے یہاں آبی اور ،خشکی کی دونوں طرح کی تفریحات موجود ہیں۔ اسکیٹنگ رنک‘ٹائے ٹرین‘میری گوراونڈ‘میری کپس ‘سلام بم‘کولمبس‘سلائیڈنگ رنگ ‘اسکٹینگ رنگ‘ اسٹرائکنگ کارس‘ ٹیلی کومباٹ‘فیریز وہیل گو کارٹنگ وغیرہ اس میں شامل ہیں۔ بڑوں کیلئے ویو پول‘ بچوں کیلئے الگ پولس موجود ہیں یہاں انڈور گیمس جیسے بلیئرڈس‘ٹیبل ٹینس‘ کیرمس‘ کارڈروم ‘شطرنج بھی موجود ہیں۔ پارک کے اوقات 11بجے دن تا6بجے شام ہیں۔ داخلہ ٹکٹ 425 روپے بالغوں کیلئے اور 330 روپے بچوں کیلئے150معمر شہریوں کیلئے ہے۔پارک پیر سے اتوار تمام ایام کھلا رہتا ہے۔پارک میں چند تفریحات کیلئے الگ سے ٹکٹ رکھا گیا ہے۔ پارک کے بارے میں مزید تفصیلات 040-30412345 سے حاصل کی جاسکتی ہیں۔
لیو اسپلاش(شامیر پیٹ):لیو اسپلاش واٹر پارک‘ ملک کے مشہور تھیم پارک میں شامل ہے۔ یہاں تفریح کے دلچسپ سامان موجود ہیں۔ یہ پارک ملک کے تمام بڑے شہروں میں قائم ہے۔ یہاں بھی دیگر واٹر پارکس کی طرح واٹر سلائیڈرس‘واٹر زور بنگ‘میتری یور‘ ریاپڈ واٹر رولر کوسٹرس موجود ہیں۔ یہاں ڈی جے کے ذریعہ رین ڈانس بھی موجود ہے۔ یہ سیاحوں میں کافی مقبول ہے۔ یہاں کی خصوصیت یہ ہے کہ یہاں سکیوریٹی اور حفاظت کا بہت خیال رکھا گیا ہے ۔ ہر جگہ نگرانی ہوتی ہے اسلئے آپ کو بچوں کو پانی میں چھوڑتے وقت محتاط رہنے کی ضرورت نہیں ہے۔اس پارک کے اوقات 10بجے دن تا11بجے رات ہیں۔ اگرچہ داخلہ ٹکٹ500روپے ہے تا ہم میاجیکل مارننگ کے نام سے مخصوص تفریحات کیلئے1150روپے اور ایفرویسنٹ ایوننگس(شام4تا11بجے رات)کیلئے 1150 روپے کا خصوصی ٹکٹ ہے یہ پارک بمراس پیٹ (شامیرپیٹ) میں بنایا گیا ہے۔ تفصیلات فون نمبر 040- 66400000سے حاصل کرسکتے ہیں۔
ونڈرلا (مہشیورم): یہ پارک آوٹررنگ روڈ کے اگزٹ نمبر13پر بنایا گیا ہے مہشیورم منڈل کے کنگارخورد موضع میں یہ پارک قائم ہے ۔یہ بھی ایک بہترین آبی تفریح کا مرکز ہے۔ جہاں تفریح کیلئے کئی جھولے‘رائیڈس سلائیڈس موجود ہیں۔یہاں بین الاقوامی معیار کی تفریح فراہم کی جاتی ہے اسلئے داخلہ ٹکٹ سب سے زیادہ یعنی850 روپے( پیر سے جمعہ ) اور1070روپے(ہفتہ اور اتوار) ہے۔ بچوں کیلئے یہ بالترتیب680روپے اور810روپے ہے۔ یہاں فاسٹ ٹریک ٹکٹ بھی ہے جس کی شرح بالغوں کیلئے1740اور بچوں کیلئے1380(پیر سے جمعہ) بالغوں کیلئے2360اور بچوں کیلئے1730(ہفتہ اور اتوار) شامل ہے۔ اوقات صبح10بجے تا شام6بجے ہوتے ہیں ۔ ہفتہ اور اتوار کو اوقات شام7بجے تک ہیں۔ یہ پارک کوچی اور بنگلور کے بعد اب حیدرآباد میں قائم کیا گیا ہے یہ پارک جس کمپنی نے قائم کیا ہے وہ پورے ایشیاء میں ایسے پارکس کے قیام کیلئے شہرت رکھتی ہے۔ اس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ اس پارک کی تعمیر پر جملہ2.5ارب روپے کی لاگت آئی ہے۔یعنی250کروڑ روپے سے یہ پارک بنایا گیا ہے۔ ہر عمر کے لوگوں کیلئے یہاں ایسی تفریح موجود ہے جس کو وہ زندگی بھر نہیں بھول سکتے ہیں‘یہاں جملہ43اقسام کے جھولے (رائیڈرس) موجود ہیں جو آپکو کو دلچسپ اور سننی خیزدونوں طرح کی تفریح فراہم کرتے ہیں۔ مزید تفصیلات فون نمبر23490333 040- سے حاصل کرسکتے ہیں۔
اسکیپ واٹر پارک(شمس آباد): حیدرآباد کے نواح میں سدولہ گٹہ‘شمس آباد کے مقام پر یہ تھیم پارک بنایا گیا ہے جس میں داخلہ ٹکٹ بالغوں کیلئے300 روپے5سے زیادہ افراد ہونے پر10فیصد ڈسکاونٹ دیا جاتا ہے۔ یہاں بھی متعدد اقسام کے جھولے اور آبی تفریح کے سامان موجود ہیں۔ خاندان کے تمام افراد کیلئے یہاں دلچسپ تفریحات موجود ہیں۔
درگم چیرو: وہ لوگ جو سینکڑوں روپے خرچ کر کے آبی تفریح نہیں کرسکتے ان کیلئے درگم چیرو ایک بہترین تفریح گاہ ہے جہاں اگرچہ ان پارکس کی طرح یہاں قیمتی جھولے نہیں ہیں لیکن5روپے داخلہ ٹکٹ کے ساتھ آبی تفریح کا مزہ لیا جاسکتا ہے۔ گرینائیٹ کی پہاڑیوں سے گھری یہ قدرتی جھیل دلچسپ نظارے پیش کرتی ہے۔ محکمہ سیاحت کی جانب سے اس کو ایک مشہور و مقبول سیاحتی مقام میں تبدیل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ یہاں ایک مصنوعی آبشار بھی بنایا گیا ہے جبکہ تیرتا ہوا فوارہ بھی آپ کو دلچسپ تفریح فراہم کرے گا۔ایک دور میں اس جھیل کو سیکریٹ لیک یعنی پوشیدہ جھیل کہا جاتا تھا اس کی وجہ سے یہ تھی کہ پہاڑوں کے درمیان یہ چھپ کر رہ گئی تھی دور سے دیکھنے پر کوئی اندازہ نہیں کرسکتا کہ یہاں کوئی جھیل بھی ہے۔ ہائی ٹیک سٹی کے دامن میں واقع اس جھیل کے پاس کوئی تنہا جانے سے بھی ڈرتا تھا لیکن اب یہاں ایسا کچھ نہیں ہے۔یہ ایک عوامی تفریح گاہ بن چکی ہے۔جہاں آپ اپنے افراد خاندان کے ساتھ جاسکتے ہیں۔یہاں کشتی رانی مقبول عام تفریح ہے۔ پیڈل بوٹ‘واٹر اسکوٹر‘میکانائزڈ بوٹ‘ کی سہولت ہے۔ جھیل کے کنارے اب کیفے‘ہوٹل وغیرہ بھی لگ گئے ہیں جہاں کھانے پینے کی اشیاء مل جاتی ہیں۔یہاں راک گارڈن بھی ہے۔ حال ہی میں پوٹی رائیڈ متعارف کروایا گیا ہے جو بہت مقبول ہورہا ہے کشتیوں کی سواری اسلئے محفوظ ہے کہ اس پر تربیت یافتہ لائف گارڈس سوار رہتے ہیں سیاحوں کو احتیاط کیلئے ہدایتیں دیتے ہیں۔واٹر پارکس یعنی آبی تفریح گاہیں اگرچہ آپ کو بہترین تفریح کا سامان فراہم کرتی ہیں لیکن پانی میں کھیل کود کے موقع پر ہمیشہ احتیاط کو ملحوظ رکھنا ضروری ہے ہر واٹر پارک میں ہدایتیں لکھی ہوتی ہیں جن پر سختی سے عمل کرنا اور بچوں کو راست اپنی نگرانی میں رکھنا بے حد ضروری ہے۔

Comments

comments