Friday , 24 November 2017
بریکنگ نیوز
Home » کھیل » کیا آفریدی کی سبکدوشی یہ آخری مرتبہ ہے؟
کیا آفریدی کی سبکدوشی یہ آخری مرتبہ ہے؟

کیا آفریدی کی سبکدوشی یہ آخری مرتبہ ہے؟

پاکستان کے عالمی شہرت یافتہ کھلاڑی شاہد خان آفریدی اپنے کھیل کی وجہ سے جتنے مشہور ہیں‘اپنے اسکنڈلس کیلئے اُتنے ہی بد نام ہیں۔ اُن کا21سالہ کیرئیر متعدد مرتبہ عروج و زوال کا شکار رہا ہے جس کو انگریزی میں رولر کوسٹر کہا جاتا ہے۔ گزشتہ دنوں انہوں نے ایک مرتبہ پھر بین الاقوامی کرکٹ سے سبکدوشی کا اعلان کردیا۔ 36 سالہ آفریدی ٹسٹ اور ونڈے سے پہلے ہی ریٹائرڈ ہوچکے ہیں۔ لیکن وہ پاکستانیT20 کرکٹ ٹیم کے کپتان برقرار تھے ۔2016 ورلڈ چمپیئن شپ میں انہوں نے ٹیم کی قیادت کی تھی۔ اس ٹورنمنٹ کے بعد انہوں نے کپتان کی حیثیت سے سبکدوشی کا اعلان کیا تھا لیکن کھلاڑی برقرار رہے۔ تا ہم اس دوران انہوں نے گزشتہ دنوںT20 سے بھی ریٹائرڈ ہونے کا اعلان کردیا ہے۔ اپنے کیرئیر میں آفریدی کئی مرتبہ ریٹائر ڈہوئے ہیں اور میدان میں واپس آئے ہیں‘جس وقت انہوں نے بین الاقوامی کرکٹ سے مکمل سبکدوشی کا حالیہ اعلان کیا تھا اس وقت وہ پاکستان میں جاری پی ایس ایل کھیل رہے تھے تا ہم زخمی ہونے کی وجہ سے فائنل میں حصہ نہ لے سکے۔1996میں اس وقت آفریدی کرکٹ کی اُفق پر ایک ستارہ بن کر چمکے تھے جب انہوں نے سری لنکا کے خلاف صرف37 گیندوں میں سنچری بنا کر عالمی ریکارڈ قائم کردیا تھا۔17 برسوں تک دُنیا کا کوئی کھلاڑی ان کا یہ ریکارڈ نہ توڑ سکا۔ جب انہوں نے گیند بازی شروع کی تو وہاں بھی ریکارڈ قائم کئے۔ اس طرح ایک آل راونڈر کی حیثیت سے انہوں نے پاکستان کی کئی اہم کامیابیوں میں مدد کی۔آفریدی نے ٹسٹ کیرئیر سے اس وقت ریٹائرڈ ہونے کا فیصلہ کیا جب انہوں نے صرف27میچس کھیلے تھے۔ ان میچس میں انہوں نے1176 رنز بنائے جن میں سب سے زیادہ156 رنز ہیں ۔ٹسٹ کرکٹ میں انہوں نے48وکٹس بھی حاصل کئے۔ونڈے انٹر نیشنل میں ان کا کیرئر شاندار رہا۔ انہوں نے398 میچس کھیل کر 8064 رنز بنائے سب سے زیادہ اسکور124 رنز تھا۔ ونڈے میں انہوں نے395وکٹس بھی حاصل کئے۔جہاں تک ٹی20 کاسوال ہے انہوں نے پاکستان کیلئے98بین الاقوامی ٹی ٹوینٹی میچس کھیلے ہیں جن میں انہوں نے 1405 رنز بنائے اور97وکٹیں حاصل کیں۔پاکستان کرکٹ بورڈ کے صدرنشین شہر یار خان نے آفریدی کو ٹی ٹوینٹی سے سبکدوش ہونے کے فیصلے پر نظر ثانی کرنے کا مشورہ دیا ہے۔2007 ورلڈ کپ کی تیاریوں کے ضمن میں انہوں نے2006 میں ٹسٹ سے سبکدوشی کا اعلان کیا تھا لیکن2006 اپریل میں انہوں نے دوبارہ ٹسٹ میں حصہ لیا۔ 2006 کے بعد ایک طویل عرصہ تک انہوں نے ٹسٹ کرکٹ میں حصہ نہیں لیا لیکن2010 تک وہ ٹسٹ ٹیم میں برقرار رہے۔آفریدی نے مئی 2011 میں دوبارہ ریٹائرمنٹ کا اعلان کیا لیکن اکتوبر میں دوبارہ واپس آگئے۔ 2011 آفریدی کیلئے کافی طوفانی رہا۔ پی سی بی نے ان کو ونڈے کپتان کی حیثیت سے برخواست کردیا۔ اس پر دلبرداشتہ آفریدی نے ونڈے سے سبکدوشی کا اعلان کر دیا لیکن چند مہینوں میں ہی واپس آگئے۔2012 میں ایک مرتبہ پھر ان کے ریٹائر منٹ کے چرچے ہونے لگے۔ سری لنکا کے خلاف سیریز میں ان کا مظاہرہ ناقص رہا تھا۔ 2015 ورلڈ کپ کیلئے پاکستانی ٹیم میں نوجوانوں کو جگہ دینے آفریدی نے ایک مرتبہ پھر ریٹائرڈ ہونے کافیصلہ کیا۔ تا ہم بوم بوم آفریدی میدان میں جمے رہے۔ورلڈکپ2015 کے کورٹر فائنل میں شکست کے بعد آفریدی نے ونڈے سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا۔تا ہم بعد میں ان کا یہ اعلان سامنے آیا کہ وہ آئی سی سی ورلڈ ٹی ٹوینٹی کے بعد ریٹائر ڈہوں گے ۔ اس طرح ان کی سبکدوشی کے اعلان اور حقیقی سبکدوشی میں کافی تضاد رہا ہے۔ 20فروری2017 کو ایک مرتبہ پھر آفریدی نے بین الاقوامی کرکٹ سے سبکدوشی کا اعلان کردیا ہے۔ اس اعلان کے وقت وہ پی ایس ایل میں پشاور زلمی کیلئے کھیل رہے تھے ۔ چونکہ وہ ابھی36برس کے ہیں اور ان سے بڑی عمر کے کھلاڑی ابھی کھیل رہے ہیں اس لئے یہ گمان ہے کہ آفریدی ٹی ٹوینٹی میں واپس آسکتے ہیں۔

Comments

comments