Friday , 24 November 2017
بریکنگ نیوز
Home » گوشۂ نسواں » تعطیلات میں کیا کریں؟
تعطیلات میں کیا کریں؟

تعطیلات میں کیا کریں؟

ملک کے مختلف علاقوں سے سرما رخصت ہوچکا ہے اور اس موسم کی جگہ گرما دستک دے رہاہے۔ملک کی مختلف ریاستوں میں جہاں دن کے درجہ حرارت میں اضافہ ہوا ہے وہیں‘امتحانات کا موسم بھی شروع ہوا ہے طلباء‘امتحانات کی تیاریوں میں مصروف ہیں۔ ان امتحانات کے بعد خواتین کو صبح سویرے اُٹھنا‘بچوں کیلئے ٹفن بنانا اور انہیں تیار کرنے کی پریشان کن صورتحال سے عارضی چھٹکارہ مل گیا ہے۔ ماہ اپریل کے وسط یا اواخر سے تعلیمی اداروں کو لگ بھگ6ہفتوں کی گرمائی تعطیلات رہیں گے۔28تا45دنوں کے طویل تعطیلات میں بچوں کو کیسا مصروف رکھا جائے‘یہ سوال والدین کو پریشان ضرور کرتا ہے۔ ان ایام کو بچوں کیلئے فائدہ مند بنانے کیلئے والدین بالخصوص ماں کو ذہن کھپانے کی ضرورت نہیں ہے گرمائی تعطیلات کے آغاز سے قبل ان تعطیلات کے صحیح مصرف کیلئے ایک منصوبہ تیار کریں آپ چاہے تو اس منصوبہ کی تیاری میں بچوں کی مدد بھی لے سکتی ہیں۔ اللہ تعالیٰ نے اگر آپ کو مال و دولت دی ہے تو آپ‘شوہر اور بچوں کے ساتھ تفریحی کیلئے نکل سکتی ہیں اس کیلئے ملک کے پہاڑی علاقوں کے علاوہ بیرونی ممالک کاسفر بھی اختیار کرسکتی ہیں اگر آپ کامتوسط آمدنی والا خاندان ہے تو سیر و تفریحی کے منصوبہ کو ترک کردیں۔ماں‘بچوں کی بہترین ٹیچر اور ساتھی ہوسکتی ہے ۔ بچوں کی خامیاں اور خوبیوں سے بہتر طور پر واقف ہوسکتی ہے۔ اسے بخوبی علم رہتا ہے کہ کونسے بچے میں کتنی اور کونسی صلاحتیں پائی جاتی ہیں۔ شوہر کے مشورے کے بعد بچوں کو سمر کلاسس میں جوائن کرادیں۔آپ یہ محسوس کرتی ہیں فلاں لڑکے میں مصوری اور گلو کار بننے کی صلاحیتیں بہ درجہ اُتم موجود ہیں تو ان بچوں کو سمر پینٹنگ‘یا گلو کاری کے ادارہ میں داخلہ دلوادیں جہاں ان40دنوں کے دوران وہ بہت کچھ سیکھ پائے گا ۔ اگر آپ کا لڑکا یا لڑکی نہم یا انٹر میڈیٹ سال اول کا امتحان کامیاب کیا ہے تو آپ‘ گرمائی کوچنگ کلاسس میں انہیں شریک کرادیں۔نہم کی کامیابی کے بعد آپ کی بیٹی یا بیٹے کو ایس ایس سی کے مشکل مضامین پڑھنے اور سیکھنے کیلئے انہیں سمر کوچنگ کلاسس میں داخلہ دلوادیں‘ایس ایس سی نصاب کو پڑھنے اور سمجھنے کیلئے یہ گرمائی تعطیلات‘ انتہائی ممدو معاون ثابت ہوسکتے ہیں۔اگر آپ کے برخوردار یا دختر انٹر میڈیٹ کا امتحان دے چکی ہیں تو انہیں ایمسٹ یا دیگر مسابقتی امتحانات کی کوچنگ ضرور دلوائیں ان سب کے دوران بچوں کو اسلامک سمر کوچنگ کلاس میں داخلہ دلواکر آپ آنے والی نسل کو اسلامی تاریخ سے واقف کراسکتی ہیں۔ شہری اور دیہی علاقوں میں مختلف علما دینی تنظیموں اور اداروں کی جانب سے چالیس روزہ سمر اسلامک کوچنگ کلاسس کا نظم کیا جاتا ہے جہاں ان40 دنوں میں بچوں کو قرآن شریف کی مختلف آیات ‘ سورتیں ‘ دعائیں اور احادیث یاد کرائی جاتی ہیں۔بڑے بچوں کو علم کی اہمیت اور دین کی ضروری باتوں سے واقف کرایا جاتا ہے اور بچوں کو اسلام کی بنیادی تعلیم سکھائی جاتی ہے۔گرمائی تعطیلات کا سب سے بہتر مصرف یہ ہے کہ بچوں کو دینی گرمائی کلاسس میں شریک کرائیں۔اگر آپ بھی خیاطی اور خطاطی کی تربیت حاصل کرنے میں دلچسپی رکھتی ہیں تو ایسے مرکز کا انتخاب کریں جہاں ماں اور بیٹی دونوں خیاطی اور خطا طی کی تربیت حاصل کرسکیں۔ لڑکیوں کیلئے گرما میں بیوٹیشن‘ اسپوکن انگلش اور پکوان کے خصوصی کلاسس کا اہتمام کیا جاتا ہے۔ لڑکیوں کو ان میں ضرور داخلہ لینا چاہیئے۔ بیوٹیشن اور پکوان یہ دو ایسے پیشے ہیں جن سے وابستہ ہمیشہ پڑتا رہے گا۔ شہری علاقوں میں بلدیہ اورمختلف اداروں کی جانب سے مختلف کھیلوں کی تربیت کا خصوصی نظم کیا جاتا ہے۔ بلدیہ کی جانب سے تاریخی شہر حیدرآباد میں ایس ایس سی/انٹر طلباء کیلئے مختلف کھیلوں کی مفت تربیت دی جارہی ہے۔ ان مواقعوں سے کما حقہ استفادہ کریں۔ موسمی ماہرین کے بموجب رواں برس گرما سخت رہنے کا امکان ہے۔ گرما میں بچوں پر خاص نگرانی رکھیں ۔مفت تربیتی اور کوچنگ کیلئے بچوں کو صبح سویرے روانہ کریں‘ اور انہیں12بجے دن سے پہلے پہلے بچوں کو گھر آنے کیلئے کہیں۔ اس سیزن میں ماں باپ بچوں کے ساتھ گذاریں اگر آپ کی وابستگی گاؤں سے ہے۔ ان چھٹیوں میں وطن بھی جاسکتی ہیں۔ اپنے آبائی مکان میں کچھ دن قیام کرنے کے بعد دیگر رشتہ داروں کے پاس بھی جائیں اس سے نہ صرف آپ کو ذہنی سکون ملے گا بلکہ اپنے سسرالی رشتہ داروں سے میل جول بڑھانے کا ایک نادر موقع ہاتھ آئیگا۔ اس موسم میں چونکہ پیاس کی شدت میں اضافہ ہوتا ہے وہیں ٹھنڈے اور برف آمیزش کے آئسکریم کھانے سے گریز کریں کیونکہ سرد اور گرم کی وجہ سے بچوں اور بوڑھوں کی صحت پر بُرے اثرات مرتب ہوتے ہیں اس موسم میں ماؤں کو نہ صرف بچوں کی نگرانی کرنی ہے بلکہ موسم کی افادیت والی غذائیں کھلاتی رہیں تا کہ بچے‘ اس موسم میں مختلف امراض سے محفوظ رہ سکے۔ خصو صی کلاسس سے آنے کے بعد خود بھی‘ بچوں کو کیا پڑھایا گیا اور انہیں کیا سکھایا گیا ہے‘ اس کا جایزہ لیتی رہیں۔ گرمائی تعطیلات‘قرآن مجید کی تلاوت کی تجوید کے ساتھ سیکھنے کا بھی بہتر ذریعہ ہے۔ ان تعطیلات میں آپ اور آپ کے بچے‘تجوید سیکھ سکتے ہیں یہ بہتر عمل رہے گا۔تعطیلات میں چونکہ بچے عموماً گھر پر رہتے ہیں۔اسلئے اپنے بچوں کو ذائقہ دار اور چٹ پٹے ڈشش بنا کر کھلانے کا ایک زریں موقع آپ کے ہاتھ آتا ہے‘ اُسے ضائع نہ کریں۔ بچوں کو مختلف من پسند اور ذائقہ دار ڈشیش بنا کر کھلائیں۔ ذائقہ دار اور لذیذ پکوان کرنے والی خاتون ہی مردوں کے دل و دماغ پر قبضہ کرسکتی ہے وہیں بچوں کو اپنا گرویدہ بنا سکتی ہے ۔کوشش کریں کہ اس سیزن میں زیادہ سے زیادہ وقت بچوں‘رشتہ داروں کے ساتھ گذاریں۔ان تعطیلات میں خود سیکھیں اور اپنے بچوں کو بھی سیکھنے کا عادی بناتے ہوئے گرمائی تعطیلات کا بہتر استعمال کریں۔

Comments

comments